183

شیروان سکول کے 2 اساتذہ احساس پروگرام میں ڈیوٹی پر مامور، طلبا کے والدین کا احتجاجی مظاہرہ

گورنمنٹ ہائی سکول شیروان کے بعض اساتذہ کی مسلسل غیر حاضری کے خلاف طلبا کے والدین نے سکول کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا.مسئلہ حل نہ ہونے پر مظاہرین نے فوارہ چوک میں احتجاج کی دھمکی دے دی. تفصیلات کے مطابق ایبٹ آباد کےنواحی علاقہ شیروان گورنمنٹ ہائی سکول کمپوٹر سائنس کے دو ٹیچر دو سال سے احساس پروگرام میں اپنی ڈیوٹی سر انجام دے رہے ہیں جس کی وجہ سے شیروان ہائی سکول کے 400 طلبا کا مستقبل تباہی کی جانب گامزن ہے. اس حوالے ضلعی انتظامی کو متعدد شکایات کرنے کے باوجود کوئی ایکشن نہیں لیا گیااور ڈپٹی کمشنر سمیت تمام زمہ دار افسران خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں. بچوں کے والدین نے گورنمنٹ ہائی سکول شیروان کے سامنے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ اساتذہ کی حاضری یقینی نہ بنائی گئی تو فوارہ چوک میں احتجاج کیا جائے گا جس کی تمام تر زمہ داری ضلعی انتظامیہ پر ہوگی. والدین کا کہنا تھاحکومت کہ ایک طرف تعلیمی ایمرجنسی کی بات کرتی ہے تو دوسری طرف چار سو بچوں کا مستقبل داؤ پر لگا دیا گیا ہے، دو سال سے بچے اپنے ٹیچر کا راستہ دیکھ رہے ہیں، ضلعی انتظامیہ فوری نوٹس لیتے ہوئے احساس پروگرام میں عارضی طور پر بھیجے گئے اساتذہ کو واپس ڈیوٹی پر لائے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں