143

ڈپٹی کمشنر ایبٹ آباد محمد مغیث ثنا ء اللہ نے خبر دار کیا ہے کہ آئند ہ پولیو مہم کے لئے مقرر کئے گئے اہداف کے مکمل حصول میں کسی قسم کی کو تاہی بر داشت نہیں کی جائے گی

ڈپٹی کمشنر ایبٹ آباد محمد مغیث ثنا ء اللہ نے خبر دار کیا ہے کہ آئند ہ پولیو مہم کے لئے مقرر کئے گئے اہداف کے مکمل حصول میں کسی قسم کی کو تاہی بر داشت نہیں کی جائے گی اس لئے 21ستمبر سے ضلع بھر میں شروع ہونے والی مہم کو ہر لحا ظ سے کامیاب بنانے کے لئے ابھی سے انتظامات شروع کئے جائیں جبکہ مہم کی مانیٹرنگ کے نظام میں موجود خامیوں کو بھی دور کر کے حقائق پر مبنی مانیٹرنگ کو یقینی بنایا جائے۔ یہ احکامات انہوں نے آج اپنے دفتر میں انسداد پولیو کی ضلعی کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے جاری کئے۔ ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ پولیو کا خاتمہ ہمارا قومی ہدف ہے اور پانچ سال تک کی عمر کے ہر بچے کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلا کر ہی ہم یہ اہم ترین ہدف حاصل کر سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ضلع میں آٹھ ماہ بعد پولیو مہم دوبارہ شروع کی جا رہی ہے اس لیے اس دوران نئے پیدا ہونے والے بچوں کو پولیو سے محفوظ رکھنے کے قطرے پلانے پر خصوصی توجہ دی جائے اور ان بچوں کے اعداد و شمار بھی مرتب کئے جائیں۔مغیث ثنا ء اللہ نے محکمہ صحت کو ہدایت کی کہ وہ گزشتہ مہم کے دوران کنٹونمنٹ کے علاقے میں پیدا ہونے والے مسائل پر سنجیدگی سے توجہ دے اور پولیو ٹیموں کو اس طرح کے مسائل سے نمٹنے کے لیے باقاعدہ تربیت دی جائے۔اجلاس کو بتایاگیا کہ 21ستمبر سے شروع ہونے والی پولیو مہم کے دوران ایبٹ آباد کی54 یونین کونسلوں میں 216385 بچوں کو پولیو کے قطرے پلانے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے جس کے لیے 940 موبائل ٹیمیں،103فکس ٹیمیں، ٹرانسپورٹ اڈوں پر34ٹیمیں اور چار رومنگ ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں جبکہ موبائل ٹیمیں ضلع کے 186892 گھروں میں جاکر بچوں کو پولیو کے قطرے پلائیں گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں