145

” صحت کا انصاف” والوں نے عوام کو صحت کی سہولیات سے محروم کردیا: شوکت ہارون

ایبٹ آباد: پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے ہزارہ ڈویژن کی عوام سے دشمنی کی تمام حدیں پھلانکتے ہوئے سابق ادوار میں عوام کو دی جانے والی سہولیات چھین کر رکھدی ہیں ان خیالات کا اظہار سابق ممبر ضلع کونسل شوکت ہارون خان جدون نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا شوکت ہارون خان نے کہا ہزارہ ریجن بشمول شمالی علاقہ جات وگلگت بلتستان کی عوام کو صحت کی سہولیات فراہمی کے طبی مرکز ایوب ٹیچنگ ہسپتال میں مریضوں کو سہولیات کی فراہمی بند کرنے کی سازش کرتے ہوئے صحت انصاف کے دعویداروں نے عوام کو علاج معالجہ سے محروم کردیا گیا ہے پچھلے 3 سالوں سے مسلسل سی ٹی سکین مشین اور ایک سال سے انجیو گرافی مشین خراب ہونے سے مریض ہسپتال سے باہر پرائیویٹ ہسپتالوں اور لیبارٹریز پر ٹیسٹ کروانے جارہے ہیں جس سے نہ صرف مریضوں کو مالی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے بلکہ درد مندی کی حالت میں اذیت سے دوچار ہورہے ہیں جبکہ پی ٹی آئی حکومت نے صحت کارڈ کا واویلا کرتے ہوئے عوام کو مفت علاج کی سہولیات کا ڈرامہ رچایا اور انشورنس کمپنی کو ادائیگی نہ ہونے پر اب مریض دربدر کی ٹھوکریں کھا رہے ہیں اور عوام کے ساتھ بھونڈا مذاق کیا گیا ہے اور ہسپتال میں جو سابقہ حکومتوں میں علاج کی سہولیات فراہمی تھی اب سرے سے بند ہوگئی ہیں اور غریب عوام پرائیویٹ ہسپتالوں میں علاج کروانے پر مجبور ہیں اور کہاکہ منتخب عوامی نمائندوں کی نالائقی کیوجہ سے بورڈ آف گورنرز ممبران اور چیئرمین دوسرے صوبوں سے لیئے گئے ہیں جنہیں ہزارہ ڈویژن بالخصوص ایبٹ آباد کی عوام سے کوئی سروکار نہیں ہے جس کی وجہ سے ایوب ٹیچنگ ہسپتال مریضوں کے لئے بے سود ہوتا جارہا ہے شوکت ہارون خان نے پی ٹی آئی حکومت اور منتخب اراکین پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا عوام نے ووٹوں کی بوریاں بھر کردی ہیں لیکن آج اپنے ہی ووٹروں اور دیگر عوام کیساتھ جو انصافی کی جارہی ہے اس کی ماضی میں مثال نہیں ملتی ہے اور کہا کہ اگر پی ٹی آئی حکومت مزید سہولتیں فراہم نہیں کرسکتی تو سابقہ سہولیات چھیننے سے گریز کرے سابق ممبر ضلع کونسل کا یہ بھی کہنا تھا شاہراہ ریشم ری کارپٹنگ عوام کے لئے عذاب بن گیا ہے جس کی تکمیل کے دعوے اپریل تک کئے گئے مگر ابھی تک آدھا کام بھی نہیں ہوسکا اور جس طرح ناقص میٹریل اور نان ٹیکنیکل طریقے سے روڈ بنایا جارہا ہے تکمیل سے پہلے ہی کھنڈرات بن جائے گا شوکت ہارون خان نے حکومت اور سرکاری اداروں کی جانب سے سست روی پر شدید تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے خبردار کیا اگر اسی طرح عوام کیساتھ ناانصافیوں کا سلسلہ برقرار رہا تو عوام کے قہر وغضب سے کوئی نہیں بچا سکے گا شوکت ہارون خان کا کہنا تھا ماضی میں بھی بڑے نام تھے لیکن جنہوں نے اپنے علاقہ کے عوام سے ناانصافی کی ایبٹ آباد کی عوام نے اوپر سے اٹھا کر نیچے زمین پر پھینک دیا ہے موجودہ منتخب قیادت ان سے سبق سیکھے کیونکہ منتخب اراکین نے یہاں پر ہی رہنا ہے حکومتی عہدے ہروقت نہیں رہتے ہیں اور اقتدار کے باوجود عوام کو مزید سہولتیں دینے کی بجائے دی گئی سہولیات سے محروم رکھنا نااہلی ہے جس کا خمیازہ بھگتنا پڑے گا اور عوام ان نالائقیوں کا ضرور احتساب کرے گی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں