63

امیر اور غریب کا فرق ختم کرنے کے لیے یکساں نصاب تعلیم نافذ کر دیا جائے گا:اکبر ایوب

خیبرپختونخواہ کے وزیر ایلمنٹری و سکینڈری ایجوکیشن اکبر ایوب خان نے اعلان کیا ہے کہ امیر اور غریب کا فرق ختم کرنے کے لیے آئندہ دو ماہ میں پرائمری کی سطح پریکساں نصاب تعلیم نافذ کر دیا جائے گاجس کے لئے وفاقی حکومت کے ساتھ مل کر کافی پیش رفت ہو چکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وباء کے خطرات سے بچنے کے لئے تعلیمی ادارے بند کرنے پڑے اور ان حالات میں کافی سوچ بچار کے بعد نویں اور گیارویں جماعت کے نتائج کی بنیاد پر میٹرک اور انٹرمیڈیٹ کے نتائج مرتب کرنے کا مشکل فیصلہ کیا گیا کیونکہ اس فارمولے کے بغیر طلبہ کا قیمتی وقت اور محنت بچانے کا کوئی راستہ موجود نہیں تھا۔ اکبر ایوب خان نے بتایا کہ کورونا کی وجہ سے بند کئے گئے شعبوں کو کھولنے کا جائزہ عید کے بعد کیا جائے گا تاہم آئندہ عید اور محرم کے ایام میں کورونا سے بچاؤ کے لیے انتہائی زیادہ احتیاط کرنا ہوگی۔ یہ اعلانات انہوں نے منگل کے روز بورڈ آف انٹرمیڈیٹ اینڈ سکینڈری ایجوکیشن ایبٹ آباد میں میٹرک اور انٹر میڈیٹ کے امتحانات میں نمایاں پوزیشن حاصل کرنے والے طلبہ و طالبات میں سرٹیفکیٹ اور نقد انعامات تقسیم کرنے کی تقریب سے مہمان خصوصی کی حیثیت سے خطاب کرتے ہوئے کئے۔ تقریب میں خیبر پختونخوا کے سیکرٹری تعلیم ندیم افضل چوہدری، پوزیشن ہولڈر طلبہ و طالبات،ان کے والدین اور متعلقہ سکولوں کے سربراہان نے شرکت کی۔جبکہ بورڈ کے چیئرمین پروفیسر مختیار خان اور سیکرٹری ڈاکٹر شائستہ ارشاد نے اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے بورڈ کی سرگرمیوں، کامیابیوں اور مستقبل کے منصوبوں کا ذکر کیا۔ صوبائی وزیر تعلیم اکبر ایوب خان نے اپنے خطاب میں یکساں نصاب تعلیم کے حوالے سے موجودہ حکمران جماعت پاکستان تحریک انصاف کے ویژن اور ایجنڈے کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ حکومت دراصل متوسط اور نچلے طبقے کو ہی پاکستان تحریک انصاف سمجھتی ہے کیونکہ یہی طبقات پی ٹی آئی کی اصل روح اور طاقت ہے اس لیے ہم نے ان طبقات کی محرومیاں ختم کرنے کے لیے تعلیمی نصاب میں امیر غریب کا فرق ختم کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یکساں نصاب تعلیم سے ہی غریب کے بچے کو امیر کے برابر معیارتعلیم مل سکتا ہے۔ انہوں نے امتحانات میں امتیازی پوزیشن حاصل کرنے والے طلبہ کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ یکساں نصاب تعلیم سے ہم پوری قوم اور اس کی سوچ کو یکجا کرنے کا مقصد بھی حاصل کر سکیں گے جو وزیراعظم عمران خان کا ویژن ہے۔ صوبائی وزیر تعلیم نے کہا کہ تعلیمی بورڈز جیسے اداروں میں ای -گورننس اور ڈیجیٹلائزئشن کے نظام سے شفافیت اور میرٹ یقینی ہو گا اور کورونا وباء کی موجودہ ایمرجنسی صورتحال کے باوجود ایبٹ آباد بورڈ نے طلبہ کے مفاد میں اپنا کام مکمل کیا ہے جس کے لئے بورڈ حکام خراج تحسین کے مستحق ہیں۔ اکبر ایوب خان نے کہا کہ اللہ کے فضل اور حکومت کے فیصلوں سے کورونا کی وباء کے پھیلاؤ میں خاطر خواہ کمی آئی ہے لیکن ہمیں یہ بات سمجھنی ہوگی کہ جب تک کورونا پر قابو پانے کی ویکسین ایجاد نہیں ہوجاتی یہ وباء ختم نہیں ہوگی اور اس وقت تک ہمیں انتہائی احتیاط جاری رکھنی ہوگی تاکہ ہمسایہ ملک ایران کی طرح بے احتیاطی سے یہ بیماری دوبارہ سر نہ اٹھا لے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں