75

کینٹ بورڈ انتخابات: تحریک انصاف کے امیدوار بشیر خان نااہل قرار

Jim

ایبٹ آباد (نمائندہ خصوصی)کینٹونمنٹ بورڈ انتخابات پشاور ہائیکورٹ نے ایبٹ آباد پاکستان تحریک انصاف کے مضبوط امیدوار کو اثاثے خفیہ رکھنے پر نااہل قرار دے دیا ۔ کنٹونمنٹ وارڈ 4 میں مسلم لیگ ن کے امیدوار کی رٹ پٹیشن پر پشاور ہائیکورٹ کے ڈبل بنچ نے فیصلہ سنایا۔ تفصیلات کے مطابق کینٹونمنٹ بورڈ کے انتخابات میں ایبٹ آباد وارڈ 4 کے مسلم لیگ ن کے امیدوار بیدار بخت عرف فقیرا خان نے اپنے مدمقابل پاکستان تحریک انصاف امیدوار بشیر خان جدون کی جانب سے اثاثے خفیہ رکھنے پر ڈسٹرکٹ ریٹرننگ آفیسر کے پاس اعتراض جمع کیا جس پر ڈسٹرکٹ ریٹرننگ آفیسر نے پی ٹی آئی آئی کے امیدوار بشیر خان کے کاغزات مسترد کر دیئے ۔ پی ٹی آئی کے امیدوار بشیر خان نے فیصلہ کے دفاع کے لئے ہائیکورٹ پشاور بنچ میں رٹ دائر کی

پشاور ہائیکورٹ نے الزام ثابت ہونے پر ڈسٹرکٹ ریٹرننگ آفیسر کا فیصلہ بحال رکھتے ہوئے پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار بشیر خان کو نااہل قرار دے دیا ،پشاور ہائیکورٹ کے ڈبل بنچ جسٹس نور الامین ،جسٹس صاحبزادہ وقار نے فیصلہ سنایا ،جب کہ پی ٹی آئی کے امیدوار بشیر خان کی جانب سے کامران گل ایڈووکیٹ اور مسلم لیگ ن کے امیدوار بیدار بخت عرف فقیرا خان کی جانب سے سید شاہ فیصل ایڈووکیٹ اور طارق آفریدی نے کیس کی پیروی کی ہے۔واضح رہے کہ پی ٹی آئی کے نامزد امیدوار بشیر خان وائس چیئرمین کینٹ بورڈ کی حثیت میں خدمات سر انجام دے چکے ہیں ،اور وارڈ میں اپنی کارکردگی کی بنیاد پر ہمیشہ مدمقابل امیدواروں کے لئے ناقابل شکست رہے ہیں،انتخابات میں نااہلی کے بعد ان کے کورنگ امیدوار کے طور پر ان کے فرزند نے بھی کاغذات نامزدگی جمع کر رکھے ہیں۔پشاود ہائیکورٹ کے فیصلہ کے بعد کینٹ وارڈ چار کی سیاست ڈرامائی صورت اختیار کر چکی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں