244

مانسہرہ پولیس نے ماہانہ کارکردگی رپورٹ جاری کردی

(عرفان حنیف) ایس۔پی۔انوسٹی گیشن مانسہرہ حافظ جانس خان کی ضلع مانسہرہ کے تمام تھانہ جات کے تفتیشی سٹاف کے ساتھ میٹنگ۔
میٹنگ مں ایس۔پی انوسٹی گیشن مانسہرہ کو تفتیشی سٹاف کی گزشتہ 06ماہ کی کارکردگی رپورٹ پیش کی گئی۔
سال 2020کے پہلے 06ماہ کے دوران انوسٹی گیشن سٹاف مانسہرہ کو 994مقدمات ملے۔ جن میں سے 753مقدمات کے چالان مرتب کئے گئے اور56مقدمات جانچ پڑتال کے بعد جھوٹی رپورٹ درج کروانے پر خارج کئے گئے۔
گزشتہ 06ماہ کے دوران قتل کےکل 48مقدمات رجسٹر ہوئے۔جن میں سے 06ان ٹریس مقدمات کو ٹریس کر کے ملزمان گرفتار کیاگیا۔ اوران گرفتار ملزمان سے آلہ قتل برآمد کیئے گئے جن میں 05 کلاشنکوف، 05چھریاں،04 کلہاڑیاں،17پستول برآمد کئے گئے۔ان تمام مقدمات میں بروقت چالان مرتب کے کے عدالت بھجوائے گئے۔
اقدام قتل کے ٹوٹل57مقدمات درج رجسٹرہوئے 02مقدمہ جھوٹی رپورٹ درج ہونے پر بعدتفتیش خارج کئے گئے۔بقایا مقدمات میں ملزمان کو گرفتار کر کے آلہ قتل برآمد کئے گئے اور چالان مرتب کئے گئے
ضرر کے ٹوٹل134مقدمات درج رجسٹرہوئے جن میں ملزمان کو گرفتاکیا گیا۔اور آلہ ضرر کی برآمدگی کو بھی یقینی بنایا گیا۔
اغوائیگی کے70مقدمات درج ہوئے جن میں دور دراز علاقوں سے بھی مغویہ گان کوجا کر برآمد کیا گیااور44 مقدمات میں مغویہ گان کے بیانات 164ض ف کی روشنی میں خارج کئے گئے۔
چوری چکاری کے48 مقدمات درج ہوئے جن میں زیادہ تر مقدمات ان ٹریس تھے جن کو ٹریس کیا گیا اور ما ل مسروقہ برآمد کیا گیا اور ملزمان کو گرفتارکیا گیا ملزمان کے قبضہ سے 50عدد موبائیل فون،10شاخ بکریاں،02راس گائے،01 بھینس،03راس بھینس، 02کمبل، 02سویٹر، 24عدد بیٹریاں،موبائل ٹاورما لیتی 40لاکھ، سارھے تین تولے سونا، 04کانٹے، 03 انگوٹھیاں، 02بالیاں،ایک ہار،02ٹاپس طلائی زیورات،3تولہ آرٹیفیشل ہار، دیگر گھریلو متفرق سامان 12,74000روپے نقدی برآمد کی گئی۔
16مقدمات سرقہ گاڑیاں کے درج رجسٹر ہوئے جملہ مقدمات ان ٹریس تھے۔ٹریس کرکے ملزمان کو گرفتار کیا گیا۔جن کے قبضہ سے 05گاڑیاں، 07موٹرسائیکل برآمد کئے گئے اور ملزمان کو گرفتار کیا گیا۔01مقدمہ جھوٹی رپورٹ درج ہونے پر خارج کیا گیا۔
منشیات کے343مقدمات درج ہوئے ملزمان سے بھاری مقدار میں منشیات برآمد کرکے ملزمان کو پابند سلاسل کیا گیا۔
ایس۔پی انوسٹی گیشن مانسہرہ حافظ جانس خان کا کہنا تھا کہ کسی بھی ملزم کی سز اور جزا کا معاملہ پویس کی تفتیش پر بہت زیادہ انحصار کرتا ہے۔پولیستفتیشی افسران کو سختی سے ہدایات جاری کی گئی کہ تفتیش میرٹ کی بنیاد پر کی جائے تاکہ مظلوم کی داد رسی ہو سکے۔ بے گناہ کو زیادہ سے زیادہ ریلیف دیا جائے اور گنہگاروں کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے۔انکا مزید کہنا تھا کہ جلد از جلد منشیات،اسلحہ اور چوری وغیرہ کے مقدمات میں تمام تر ریکوری جو جلد از جلد یقینی بنایا جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں